다문화도서

전세계의 언어로 된 모든 도서를 취급합니다.
각 나라별 유통체계는 다르나 원하는 시간과 원하는 도서를 가장빠르게 제공이 가능하도록 하는 노하우를 갖추고 있습니다.
단, 한 권의 도서라도 언제든지 원하는 장소에 도착하게 하는 시스템을 구축하고 있습니다.

(베트남, 태국, 대만, 중국, 일본, 말레이시아, 인도네시아, 우즈베크스탄, 러시아, 인도, 싱가포르, 몽골, 미얀마, 라오스, 캄보디아, 헝가리, 터키, 폴란드, 케냐, 남아공, 미국, 영국, 독일, 프랑스 등)

다문화도서관지원센터 운영(문의전화 02-790-0690)

파키스탄 ہے۔ برصغیر پاک و ہند کی تاریخ میں کمالیہ کو وہی مقام حا ملتان اور دہلی کو حاصل ہے۔2023년 4월호

작성자
관리자
작성일
2023-04-20 11:45
조회
366


ساہیوال۔ سطح سمندر سے 516 فٹ بلندی پر واقع ہے۔ برصغیر پاک و ہند کی تاریخ میں کمالیہ کو وہی مقام حا ملتان اور دہلی کو حاصل ہے۔

326ق م میں سکندراعظم نے پنجاب پر حملہ کیا تو شور کوٹ (ضلع جھنگ) سے ہڑپہ (ضلع ساہیے پیش قدمی کرتے وقت جس قوم نے سکندر کاراستہ روکا، وہ اس خطہ میں آباد کھو کھر قوم تھی اور سکے میں اپنے سپاہیوں کو حکم دیا تھا کہ اس شہر کو آگ لگا دیں۔ سکندر یونانی کے حملے کے 400 سال بعد آباد ہے، ایک راجہ سرکپ نامی ہوا جو چو سر کا کھلاڑی تھا، سر دھڑ کی بازی لگا کر کھیلا کرتا تھا اور د مخالف کھلاڑی کو شکست دیتا اور اس کا سر قلم کر دیا کرتا تھا۔ سیالکوٹ کا راجہ رسالو بھی چوسر کا ماہر کھلے سرکپ سے بازی کھیلنے آیا، اسے شکست دی اور اس کا سر قلم کر دیا۔ میونسپل کمیٹی بلد یہ کمالیہ میں دے موجود ہے جہاں راجہ یہ سارا کھیل کھیلتا تھا۔ سرکپ کو شکست دینے کے بعد راجہ رسالو نے اس کی بے

سے شادی کر لی۔ 1525 میں جب لودھی خاندان کی حکومت ہندوستان پر تھی تو ملتان کار کیس خان کمال خان کھرلا ہوا اور قصبہ نگری کے حاکم رائے ماند کے پاس رہنے لگا۔ اس مقام پر قیام کے دوران اس نے یہاں بزرگ شخصیت حضرت شاہ حسین کی خدمت اقدس میں ایک کھیں پیش کیا اور اللہ کے اس ولی نے خود خان کھرل کو راوی کا دلیس بخش دیا۔ اقتدار سے محرومی کے بعد رائے مماند کے بیٹوں نے انتقام کمال خا کر دیا۔ 1530